website

Welcome to our store Learn more

New collections added! Learn more

Order now and save

Paisley Autocare: تمام سروسز پر 5% رعایت سے لطف اندوز ہوں۔

ڈیل 5

مستقبل کا استعمال: DARPA کی وائرلیس پاور بیمنگ ٹکنالوجی میں ایک گہرا غوطہ

Harnessing the Future: A Deep Dive into DARPA's Wireless Power Beaming Technology Paisley Autocare

Stuart Ross |

جیسا کہ ہم مستقبل میں قدم رکھتے ہیں، توانائی کی پیداوار اور کھپت عالمی پائیداری کے لیے ایک اہم تشویش بن گئی ہے۔ ڈیفنس ایڈوانسڈ ریسرچ پروجیکٹس ایجنسی (DARPA) سب سے اہم تکنیکی ترقیوں میں سب سے آگے رہی ہے۔ وائرلیس پاور بیمنگ میں ان کا تازہ ترین منصوبہ ایک اور انقلاب ہے جو توانائی کی کھپت کو بدلنے کا وعدہ کرتا ہے جیسا کہ ہم جانتے ہیں۔

وائرلیس پاور بیمنگ

وائرلیس پاور بیمنگ کیا ہے؟

وائرلیس پاور ٹرانسمیشن کوئی نیا تصور نہیں ہے۔ یہ چھوٹے طریقوں سے ہمارے معاشرے کا حصہ رہا ہے، جیسے کہ اسمارٹ فونز یا برقی ٹوتھ برش کے لیے وائرلیس چارجنگ پیڈ۔ تاہم، وائرلیس پاور بیمنگ کا تصور اسے بالکل نئی سطح تک بڑھاتا ہے۔ اس میں جسمانی رابطوں کی ضرورت کے بغیر بجلی کی ترسیل شامل ہے، بجائے اس کے کہ الیکٹرو میگنیٹک فیلڈز، جیسے مائیکرو ویوز یا لیزر بیم استعمال کریں۔

خیال آسان ہے: ایک مقام پر بجلی پیدا کریں، اسے توانائی کے شہتیر میں تبدیل کریں، اور اسے ہوا یا خلا کے ذریعے کسی دور دراز مقام پر منتقل کریں، جہاں اسے دوبارہ قابل استعمال طاقت میں تبدیل کر دیا جائے۔ یہ ٹیکنالوجی خاص طور پر دور دراز، ناقابل رسائی، یا خطرناک مقامات پر بجلی کی ترسیل میں انقلاب لانے کی وسیع صلاحیت رکھتی ہے۔

وائرلیس پاور بیمنگ

DARPA کی شمولیت

DARPA، جدید اور جدید ٹیکنالوجیز کے لیے مسلسل جدوجہد کے ساتھ، وائرلیس پاور بیمنگ میں گہری دلچسپی لی ہے۔ ان کی بنیادی توجہ فوجی کارروائیوں میں اس کے استعمال کی کھوج پر مرکوز رہی ہے جہاں توانائی کے روایتی ذرائع دستیاب نہ ہوں یا خطرناک ہوں۔

DARPA جن منصوبوں پر کام کر رہا ہے ان میں سے ایک اعلی تعدد ریڈیو لہروں کے ذریعے بجلی کی ترسیل شامل ہے۔ "ریڈیو فریکوئنسی رسک ریڈکشن ڈیپلائمنٹ ڈیموسٹریشن" (R3D2) کے نام سے اس پروجیکٹ کا مقصد حقیقی دنیا کے منظرناموں میں اس ٹیکنالوجی کی صلاحیت کو ظاہر کرنا ہے۔

ایک اور قابل ذکر DARPA پروجیکٹ "فوٹو وولٹک ریڈیو فریکوئنسی اینٹینا ماڈیول" (PRAM) ہے۔ PRAM، ایک چھوٹا 12 انچ مربع آلہ، ایک تحقیقی مشن کے حصے کے طور پر خلا میں بھیجا گیا تھا۔ یہ ماڈیول سورج کی روشنی کو پکڑتا ہے اور اسے برقی توانائی میں تبدیل کرتا ہے، جسے یہ پھر ایک مائیکرو ویو بیم میں تبدیل کرتا ہے جسے زمین پر واپس بھیجا جا سکتا ہے۔

وائرلیس پاور بیمنگ

ممکنہ ایپلی کیشنز

وائرلیس پاور بیمنگ ٹیکنالوجی بہت ساری دلچسپ ایپلی کیشنز کے دروازے کھولتی ہے۔ یہاں کچھ ممکنہ استعمال ہیں:

اسپیس بیسڈ سولر پاور (ایس بی ایس پی): وائرلیس طریقے سے بجلی کی ترسیل کی صلاحیت کے ساتھ، ہم خلا میں شمسی پینل لگا سکتے ہیں، جہاں سورج کی روشنی ہمیشہ دستیاب ہوتی ہے اور کہیں زیادہ تیز ہوتی ہے۔ پیدا ہونے والی بجلی کو زمین پر واپس لایا جا سکتا ہے، جو صاف توانائی کا ایک مستقل، قابل اعتماد ذریعہ فراہم کرتا ہے۔

ریموٹ ملٹری آپریشنز: پاور بیمنگ دور دراز کے فوجی اڈوں کے لیے ایک اعزاز ثابت ہو سکتی ہے، جہاں توانائی کی فراہمی اکثر مشکل اور خطرناک ہوتی ہے۔ ان جگہوں پر بجلی کو بیم کیا جا سکتا ہے، جو کہ خطرناک دوبارہ سپلائی مشن کی ضرورت کے بغیر توانائی کی مسلسل فراہمی کو یقینی بناتا ہے۔

ڈیزاسٹر ریلیف: قدرتی آفات کے تناظر میں، بجلی کی فراہمی کے بنیادی ڈھانچے کو اکثر نقصان پہنچا یا تباہ ہو جاتا ہے۔ پاور بیمنگ ان تباہی سے متاثرہ علاقوں میں تیزی سے توانائی فراہم کرنے، ضروری خدمات کو طاقت دینے اور بحالی کی کوششوں میں مدد فراہم کرنے کا ایک طریقہ فراہم کر سکتی ہے۔

الیکٹرک وہیکل چارجنگ: اپنی الیکٹرک گاڑی چلانے کا تصور کریں اور ری چارج کے لیے کبھی رکنے کی ضرورت نہیں۔ پاور بیمنگ ممکنہ طور پر برقی گاڑیوں کو بجلی کا مسلسل ذریعہ فراہم کر سکتی ہے، جس سے نان سٹاپ آپریشن ہو سکتا ہے۔

آگے دیکھ

وائرلیس پاور بیمنگ میں DARPA کا قدم ایک ایسے مستقبل کی طرف ایک اہم قدم ہے جہاں توانائی اتنی آسانی سے منتقل کی جا سکتی ہے جس طرح ہم آج ڈیٹا منتقل کرتے ہیں۔ یہ ایک امید افزا ٹیکنالوجی ہے جو بجلی کی پیداوار اور کھپت میں ان طریقوں سے انقلاب لا سکتی ہے جس کا ہم صرف تصور ہی کر سکتے ہیں۔

تاہم، اس ٹیکنالوجی کے وسیع ہونے سے پہلے کئی تکنیکی رکاوٹوں کو دور کرنے کی ضرورت ہے۔ چیلنجز میں موثر پاور ٹرانسمیشن اور ریسپشن سسٹم تیار کرنا، محفوظ آپریشن کو یقینی بنانا، اور اس ٹیکنالوجی کے استعمال کے لیے ضابطے قائم کرنا شامل ہیں۔

اس ٹکنالوجی کی صلاحیت بہت زیادہ ہے، اور اس کی ترقی پر نظر رکھنے کی چیز ہے جب ہم ایک ایسے مستقبل میں قدم رکھتے ہیں جہاں صاف، موثر اور وائرلیس پاور مستثنیٰ ہونے کے بجائے معمول بن سکتی ہے۔ اس میدان میں DARPA کا اہم کام ہمیں اس مستقبل کی ایک دلکش جھلک دیتا ہے۔



ماخذ @ https://www.darpa.mil/news-events/2023-04-20